• Citizen Journalism Program

خداداد صلاحیتوں کے مالک خداداد


ہم میں سے اکثر لوگ خداداد صلاحیتوں کے مالک ہوتے ہیں، جنہیں اپنے آپ کو ثابت کرنے کے لئے صرف چند مواقعوں کی ضرورت ہوتی ہے۔ جس کے بعد اُن کا ہنر،اُن کی کامیابی کےلئے خود سرچڑھ کر بولتا ہے۔ آج میں اِس تحریر کے زریعے آپ سے متعارف کرواؤںگا ایک ایسے نوجوان کوجن کا نام ہی خداداد ہے۔


۱۵ سالہ ہونہار خداداد لیاری کے علاقہ کلری نیا آباد کے رہائشی ہیں اور اپنے دوستوں اور جاننے والوں میں ایک آرٹسٹ، ایک ہنرمند نوجوان جو سماجی اور معاشرتی مسائل کو بیان کرنے کی صلاحیت رکھنے کے ساتھ ساتھ لوگوں کو اکھٹا کرنے اوراُن کے مسائل کا حل نکالنے سے لیکر لوگوں کی مدد کرنے کا جذبہ رکھنے والے نوجوان کی حیثیت سے جانے جاتے ہیں۔

اگرآج اِن میں یہ تمام تر صلاحیتیں موجود ہیں اور لوگ اِن کو اتنا پسند کرتے ہیں تو اُس کے پیچھے چند ایسی وجوہات ہیں جو ماضی میں اِن کی زندگی کا حصہ رہی ہیں اور اُن ہی وجوہات نے انہیں اتنا با صلاحیت بنایا ہے۔


خداداد کے والد ایک ٹیکسی ڈرائیور ہیں، خداداد ۵ بہن بھائیوں میں سب سے بڑے ہیں اور اِسی وجہ سے بچپن سے ہی اِن پر کچھ ذمہ داریاں عائد ہوئیں۔ گورنمنٹ عزّت اسکول میں تعلیم حاصل کرتے ہوئے جب ساتویں جماعت تک پہنچے توگھریلو معاشی مسائل کے باعث پڑھائی کو خیرباد کہنا پڑا، والد کا ہاتھ معاشی طور پر مضبوط کرنے اور گھر کے اخراجات میں اپنا حصّہ ڈالنے کے لئے مزدوری کے ساتھ ساتھ مختلف طرح کی نوکریاں کرنی پڑیں۔ لیکن ایک کام جو خداداد نے ساتھ ساتھ جاری رکھا، وہ یہ تھا کہ جب بھی کام سے فرصت ملتی وہ فٹبال اور باکسنگ کی مفت کلاسز لینے پہنچ جاتے۔


گزرتے وقت کے ساتھ مسائل میں کچھ کمی آئی اور اُسی وقت خداداد کو عزمِ نوجوان نامی ایک پروگرام کے بارے میں پتہ چلا تو دوڑ لگائی اوراس پروگرام کا حصّہ بن گئے۔ جب پروگرام اپنے اختتامی مراحل میں تھا، تب ہی خداداد کی سوچوں میں اپنی تعلیم کو واپس سے شروع کرنے کا خواب انہیں اندر سے جگا چُکا تھا اور پھر پروگرام ختم ہونے کے بعد چند دوستوں اوراستادوں کی مدد سے خداداد نے سب سے پہلے اپنی تعلیم کا دوبارہ آغاز کیا۔


عزم نوجوان کے دوران ہی اِن کو ’’نسلی پروڈکشنز‘‘ نامی ایک ادارے سے متعارف کروایا گیا، جس کے چند پروگرامز میں حصّہ لینے کے بعد خداداد نے اسٹیج پرفارمنسز میں حصّہ لینا شروع کیا۔


اب نوبت یہ آن پڑی ہے کہ لیاری میں ہونے والا کوئی تھیٹر ہو تو خداداد کو اُس کا حصّہ بنانے کی تجویز دی جاتی ہے، کسی ویلفئیر یا سماجی سرگرمی کو پایہ تکمیل تک پہنچانا ہو تو خداداد کو اُس میں ضرور شامل کیا جاتا ہے۔ یہ عزّت اور یہ اہمیت جو خداداد کو آج مل رہی ہے، یہ سب اُن مشکلات کا پھل ہیں جن کا انہوں نے ماضی میں خوبصورتی کے ساتھ سامنا کیا۔


عزم اور حوصلہ بُلند رکھتے ہوئے آج خداداد اپنے اور اپنے معاشرے کے کل کو بہتر اور پُرسکون بنانے کی راہ پر نکل پڑے ہیں اور مجھے یقین ہے کہ خدا خداداد کو ضرورکامیاب کرے گا۔



Contributor: Abdul haseeb Khan

23 views

A Project by SIE in collaboration with KYI.

  • Facebook - White Circle
  • Twitter - White Circle
  • Instagram - White Circle