• Citizen Journalism Program

!نشے سے دور، بہتر زندگی کی طرف ایک قدم

نشے کے علاج سے آگاہی کے مرکز کا انعقاد ۸ سے ۱۰ سال پہلے کیا گیا لیکن اس کا باقاعدہ آغاز ۱۸/دسمبر/۲۰۱۸ کوہوا جس کے بعد اسے ’’سیو دا لائف آرگینائیزیشن‘‘ کانام دیا گیا۔ ادارے کے سربراہ راشد بلوچ سے بات کرنے پر معلوم ہوا کہ اس ادارے کی شروعات کا مقصد یہ تھا کہ ان کے کچھ ساتھی جو مختلف نشے کے شکار ہو چکے تھے، انہیں اس راستے سے ہٹا کےاچھے راستے پرلا سکیں . ان کی سچّی نیت اور انتھک لگن کی وجہ سے اس وقت نشہ چھوڑنے والوں کو تقریباً آٹھ تو کسی کو دس سال ہوگئے ہیں۔ اور ان کا اچھا علاج بھی کیا گیا ہے. جو لوگ نشے کی لت چھوڑ کر اپنی زندگی پُرسکون طریقے سے گزار رہے ہیں اب ان کی خواہش ہے کہ ہماری طرح دوسرے لوگ جو اس بری عادت کا شکار ہیں، انہیں بھی اس بری لت سےبچائیں.


راشد بلوچ کا کہنا ہے کہ ۲۰۱۸ میں ہم نے تقریباً ۵۰ سے زائد مریضوں کو مختلف مراکز میں بھیج کر انکا اچھے ماحول میں علاج کروایا ہے۔ کچھ لوگ ابھی بھی زیر علاج ہیں اور کچھ لوگوں کا علاج مکمل ہوچکا ہے۔ علاج ہونے ک بعد انکی بحالی کے لیے ہم نے ایک کیفے بھی بنایا ہے۔ وہاں وہ لوگ آتے ہیں جو علاج سے فارغ ہو جا تے ہیں ہم نے ان کی لیے مختلف گیمز بھی رکھے ہیں . گیم رکھنے کا مقصد یہ ہے کہ وہ معاشرے کے اس حصہ میں واپس نہ جائیں جس نے انہیں نشہ کا عادی بنا دیا تھا۔ ان کو ہم ایک اچھا ماحول دیتے ہیں اور مختلف موضوعات پر ان کوکلاسز بھی دیتے ہیں۔ یہ ریلیف سینٹر ان کی ذہن سازی کے لئے بنایا گیا ہے۔ اس ادارہ کا مقصد ایسے لوگوں کی مفت یا پھر کم سے کم پیسوں میں اچھا علاج فراہم کرنا ہے اور امید ہے کہ مستقبل قریب میں ادارہ یہ کامیابی حاصل کرلے گا۔



Contributor: Hira Ismail

0 views

A Project by SIE in collaboration with KYI.

  • Facebook - White Circle
  • Twitter - White Circle
  • Instagram - White Circle