• Pir Waleed Hussain Sarhandi

Profile: Asfa Sarhandi


آصفہ سرہندی لیاری کی رہنے والی ایک اکیس سالہ نوجوان لڑکی ہے۔ آصفہ کو بچپن سے ہی پرھنے کا بہت شوق تھا۔ دسویں جماعت پاس کرنے کے بعد ایک دن اچانک آصفہ نے سوچا کہ کیوں نہ وہ اپنے محلہ کے غریب بچوں کو مفت تعلیم دینا شروع کرےاور پھر اس سوچ کو عملے جامہ پہنانے کے لئے آصفہ نے اپنی بلڈنگ میں رہنے والے دو بچوں کو مفت تعلیم دینا شروع کردی اور ساتھ ساتھ اپنی بھی پڑھائی جاری رکھی۔ دو بچوں سے شروع کی جانے والی مفت تعلیم کی اس مہم میں اب آصفہ کے پاس مفت تعلیم حاصل کرنے والے بچوں کی تعداد بیس کے لگ بھگ ھہ چکی تھی۔

آصفہ کے اس شوق کو دیکھتے ہوئے اُن کے والد نے آصفہ کو اپنی ہی بلڈنگ میں ایک چھوٹا سا سینٹر کھول کر دیدیا، جہاں آصفہ بچوں کو مفت تعلیم دیا کرتی تھی، لیکن آصفہ یہیں تک نہیں رکی اور انہیوں نے اپنی پڑھائی کے ساتھ ساتھ فیشن ڈیزائیننگ کا بھی کورس کیا اور ’’رائٹ ٹو پلے‘‘ نامی پاکستان کے ایک بڑے ادارہ میں بحیثیت ’’گول کوچ‘‘ کے کام کر رہی ہیں ۔ یہ ادارہ پاکستان میں خواتین کے حقوق کے لئے کام کرتا ہے۔ آصفہ کا کہنا ہے کہ وہ ایک خود مختار لڑکی ہیں اور وہ عورتوں کے حقوق کے لئے کام کرنا چاہتی ہیں اور وہ اپنا یہ مشن آگے بھی جاری رکھیں گی۔

Contributor:

Pir Waleed Hussain Sarhandi is a participant from Khadda Memon Market, Lyari. He is interested in photography and currently involved in many social activism projects in his area.


39 views

A Project by SIE in collaboration with KYI.

  • Facebook - White Circle
  • Twitter - White Circle
  • Instagram - White Circle