• Junaid Shah Soori

اعتماد نے کیمرہ کے خوف کو ختم کردیا


وجیہ ثانی سن ‌ 2004 سے جیو نیوز میں بحیثیت اینکر کے کام کر رہے ہیں۔انتہائی سادہ لوح انسان ہیں، نمودونمائش کے بلکل بھی شوقین نہیں، عام سے کپڑے پہنتے ہیں، بچپن کے دوستوں سے آج بھی ویسی ہی دوستی ہے جیسا کہ بچپن میں ہوا کرتی تھی، درویشوں جیسی زندگی گزارتے ہیں۔ ادب اور شاعری سے بھی لگاؤ رکھتے ہیں۔ حال ہی میں ان کا مجموعہ کلام "محبت راستے میں ہے" شائع ہوا۔

جیو نیوز کے شستہ وشائستہ اینکر ،صحافی،شاعر وجیہ ثانی سے ہونے والی گفتگو کو سوالوں کی صورت میں قارئین کی نظر کرنا چاہتا ہوں۔

جنید: صحافت میں کیسے آنا ہوا؟

وجیہ:آپ اسےحادثہ کہہ سکتے ہیں۔ میں ہمدرد یونیورسٹی میں زیر تعلیم تھا،مجھے تقریر کرنے کا بے حد شوق تھا۔ سن 1999 میں پڑھائی کے ساتھ ساتھ ریڈیو پر پروگرام کرنے لگا۔ پروگرام کرتے کرتے یقین ہوگیا کہ میری اصل فیلڈ براڈ کاسٹنگ ہی ہے،حالاں کہ میرے پاس انجینئرنگ کی ڈگری تھی،لیکن مجھے اندازہ ہوا کہ میرا رجحان اس طرف نہیں ہے۔

جنید:آپ کا شمار بہترین نیوز اینکرز میں ہوتا ہے کیسا لگتا ہے؟

وجیہ: دیکھیے،بہترین تو اللہ کی ذات ہے،انسان صرف کوشش کرتا ہے،پھر لوگوں کی محبت اور والدین کی دعائیں بھی ساتھ ہوں،تو کامیابی مل ہی جاتی ہے۔

جنید:پہلی بار کیمرے کا سامنا کیا تو کیا احساسات تھے؟

وجیہ:میں پہلے آڈیشن میں فیل ہوگیا تھا،جس کے بعد ایک چھوٹے نیوز چینل میں بطور پروڈیوسر ملازمت کرنے لگا۔ ایک روز کسی مجبوری کے پیش نظر وہاں کا نیوز اینکر آنہیں سکا، تو میرے سی ای او نے عارضی طور پر مجھے پانچ منٹ کا بلیٹن پڑھنے کو کہا،جو میں نے پڑھ لیا،اس کے بعد سی ای او خوشی کے عالم میں میرے پاس آئے اور کاندھا تھپتھپاتے ہوئے کہا "بیٹا تم تو جیو" کے لیے بنے ہو، پھر کچھ ہی دنوں بعد جیو ٹی وی سے آفر آگئی،اسی طرح جیو ٹی وی کا حصہ بن گیا۔

Contributor:

Junaid Shah Soori is a participant from Sultanabad - Hijrat Colony. He is interested in photography and video journalism.


12 views

A Project by SIE in collaboration with KYI.

  • Facebook - White Circle
  • Twitter - White Circle
  • Instagram - White Circle